Home » ابوالاسجد محمد صدیق رضا

ابوالاسجد محمد صدیق رضا

المھند کے دفاع کا علمی جائزہ بجواب المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ

عقیدہ نمبر:2کی بحث بھی’’شدرحال‘‘سے متعلق ہے البتہ ’’خلاصہ المہند‘‘میں اسے عقیدہ نمبر 2کے نام سے علیحدہ پیش کیا گیا ہے ،تو شاہ صاحب نے بھی اس کے تحت مختصر سا جواب لکھا، اب آیئے اس عقیدہ اور گھمن صاحب کی دفاعی کاروائی کی طرف: عقیدہ نمبر:2سفر مدینہ کے وقت آنحضرت ﷺ کی زیارت کی نیت کرے اور ساتھ ہی مسجد …

Read More »

المھند کے دفاع کا علمی جائزہ بجواب المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ

گھمن:عقیدہ نمبر:2 مرزائیو ںکی تعزیت اور شادی کی دعوت وغیرہ میں جانا جائز ہے ملاحظہ فرمائیں: مشہور غیر مقلد مولانا امرتسری لکھتے ہیں: ’’مرزائیوںسے تعزیت کرنا،دعوت شادی قبول کرنا،رسمی سلام کرنا اور مسجد میں چندہ لینا جائز ہے ۔‘‘(فتاویٰ ثنائیہ ۱؍۴۳۳) (ص:۴۶) جواب: گھمن صاحب کی اس کتاب کو پڑھتے ہوئے کئی ایک مقام پر یہ محسوس ہوا کہ جناب اس کتاب …

Read More »

المھند کے دفاع کا علمی جائزہ بجواب المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ

فریق مخالف کا اعتراض: مفتی احمد یار خان صاحب نے اس حدیث کو متعلق جو کچھ لکھا ہے اس کاخلاصہ یہ ہے کہ یہ حدیث قبروں کومٹادواور گرادو،مشرکین کی قبروں کے متعلق ہے اور اس کی دلیل وہ حدیث پیش کی گئی ہےکہ آنحضرت ﷺ نے مشرکوں کی قبروں کواکھاڑنے کا حکم دیا اور لکھتے ہیں کہ شیخ ابن حجر …

Read More »

المھند کے دفاع کا علمی جائزہ بجواب المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ

قسط نمبر:7 المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ طور سے متعلق تھانوی صاحب کی توجیہ تھانوی صاحب کے مذکورہ فتوی پر کسی نے سوال کیا کہ آپ نے لکھا ہے ’’اس کو زیارت قبورسے کوئی علاقہ نہیں‘‘مگر میں نے حجۃ اللہ البالغہ کی بحث شرک میں زیارت قبور کےلئے سفرکرنے سے منع دیکھا، دوسرا یہ کہ شرّاح حدیث نے بعض صحابیؓ …

Read More »

المھند کے دفاع کا علمی جائزہ بجواب المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ

قسط نمبر: 6 (۳۴) گھمن:نواب سیدنورالحسن خان اپنی مایہ ناز کتاب ’’عرف الجادی‘‘کے صفحہ:102پر لکھتاہے:’’مگر دوسہ حدیث کی سند ش لابأس بہ است ودلالتش برفضیلت زیارت است‘‘ ( ص:39) الیاس گھمن کی پہلی خیانت ودھوکہ جواب:افسوس کہ گھمن صاحب نے ’’عرف الجادی‘‘ سےیہ موقف پیش کرتے ہوئے صاف دھوکہ وخیانت سے کام لیا اور پوری بات نقل نہیں کی اصل …

Read More »

المھند کے دفاع کا علمی جائزہ بجواب المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ

قسط نمبر: 5 عقیدہ نمبر:1 مسئلہ شد رحال یعنی زیارت قبور کےلئے دوردراز کاسفرطے کرنا دیوبندیہ کے اس عقیدے پربحث سے پہلے یہ بات عام قارئین کے لئے واضح ہو کہ مسئلہ زیارت اور زیارت کے لئے’’شد رحال‘‘ کجاوے کسنامطلب سفرکرنا دومختلف مسائل ہیں،نبی مکرم ﷺ کی قبر مبارک تو کیا عام قبور کی بھی زیارت کو کسی عالم نے …

Read More »

المھند کے دفاع کا علمی جائزہ بجواب المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ(قسط 3)

قسط نمبر: 3 صوفیاء کی باتیں پیش نہ کریں (۲۴) گھمن :’’ہم نے بہت سی مشہور کتابوں کا تذکرہ کردیا ہے غیرمقلدین کو چاہئے کہ اگرہمارے عقائد معلوم کرنے ہیں تو ان کتابوں کی طرف رجوع فرمائیں،صوفیاء کی باتیں پیش نہ کریں،صوفیاء کی باتیں دین میں حجت نہیں ہوتیں۔‘‘(ص:۳۱) جواب: گھمن صاحب نے‘‘چند اصولی باتیں‘‘ کرتے ہوئے یہ بات لکھی …

Read More »

المھند کے دفاع کا علمی جائزہ بجواب المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ

قسط نمبر 4 کرامات اولیاء اور اکابرین دیوبند امام طحاویaکرامات پر گفتگو کرتے ہوئےفرماتے ہیں: ونؤمن بماجاء من کراماتھم ،وصح عن الثقات من روایاتھم. ہم ان کی کرامات پر ایمان لاتے ہیں جو ان کی روایات میں سے ثقہ راویوں سےثابت ہیں۔(العقیدۃ الطحاویہ) کرامات کا ثقہ راویوں سے ثابت ہونا بھی ضروری ہے ،جس طرح لوگوں نے من گھڑت احادیث …

Read More »

لمھند کے دفاع کا علمی جائزہ بجواب المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ(قسط 2)

         قسط نمبر 2 :اتباع وتقلید میں فرق :دوسری اہم بات یہ ہے کہ مقلدین حضرات ’’تقلید‘‘ اور ’’اتباع‘‘ کےد رمیان فرق کے قائل نہیں ہیں :چنانچہ ان کے’’قطب الارشاد ،امام ربانی‘‘رشید احمد گنگوہی صاحب نے لکھا اتباع وتقلید کے معنی واحدہیں۔ (تالیفات رشیدیہ ،ص:۵۱۹مطبوعہ ادارہ اسلامیات لاہور) :ان کے ’’امام اہل سنت، شیخ الحدیث‘‘ محمد سرفراز …

Read More »

المھند کے دفاع کا علمی جائزہ بجواب المھند پر اعتراضات کا علمی جائزہ(قسط نمبر1)

قسط نمبر1 علماء دیوبند کے حیاتی طبقہ کے عقائد کی ایک متفقہ کتاب المھند علی المفندہے۔ *جسے حیاتی طبقہ کے ہاں بڑی اہمیت و پذیرائی دی جاتی ہے کیونکہ چوبیس اکابر علماء دیوبند نے اس پر اپنی تصدیقات ثبت کی ہیں اور اس کے مندرجات کو اپنے عقائد تسلیم کیا ہے۔ *علماء دیوبند کے باہمی اختلافات کے سبب 1388 ھ …

Read More »