Home » الشیخ عبدﷲ ناصر رحمانی

الشیخ عبدﷲ ناصر رحمانی

امیر جمعیت اہل حدیث سندھ

روزہ کے چند ضروری احکام

(۱)  روزہ کی فرضیت کی ابتداء  ماہِ رمضان کے روزے ، رمضان کا مہینہ شروع ہوتے ہی فرض ہوجاتے ہیں۔  ماہِ رمضان کا شروع ہونا تین طریقوں سے معلوم ہوسکتا ہے : پہلا طریقہ:  رؤیتِ ہلال ، اﷲتعالیٰ کافرمان ہے: [فَمَنْ شَہِدَ مِنْكُمُ الشَّہْرَ فَلْيَصُمْہُ۝۰ۭ ]      ترجمہ:’’تم میں سے جو شخص اس مہینہ کو پائے اسے روزہ رکھنا چاہئے‘‘(البقرۃ:۱۸۵) …

Read More »

اربعینِ نووی(حدیث نمبر28 قسط نمبر 60)

عَن أَبي نَجِيحٍ العربَاضِ بنِ سَاريَةَ رضي الله عنه قَالَ: وَعَظَنا رَسُولُ اللهِ مَوعِظَةً وَجِلَت مِنهَا القُلُوبُ وَذَرَفَت مِنهَا العُيون. فَقُلْنَا: يَارَسُولَ اللهِ كَأَنَّهَا مَوْعِظَةُ مُوَدِّعٍ فَأَوصِنَا، قَالَ: (أُوْصِيْكُمْ بِتَقْوَى اللهِ عزوجل وَالسَّمعِ وَالطَّاعَةِ وَإِنْ تَأَمَّرَ عَلَيْكُمْ عَبْدٌ، فَإِنَّهُ مَنْ يَعِشْ مِنْكُمْ فَسَيَرَى اخْتِلافَاً كَثِيرَاً؛ فَعَلَيكُمْ بِسُنَّتِيْ وَسُنَّةِ الخُلَفَاءِ الرَّاشِدِينَ المّهْدِيِّينَ عَضُّوا عَلَيْهَا بِالنَّوَاجِذِ وَإِيَّاكُمْ وَمُحْدَثَاتِ الأُمُورِ فإنَّ كلّ مُحدثةٍ …

Read More »

زمین کھاگئی آسماں کیسے کیسے

الحمد للہ والصلوۃ والسلام علی رسول  ﷲ (ﷺ) وبعد! میراروحانی فرزند ذوالفقار علی طاہرaمجھے،اپنے دیگراساتذہ،تمام شاگردوں ،ساتھیوں،گھروالوں اور پوری جماعت کوسوگوار چھوڑ کر اپنی آخری منزل کو روانہ ہوگیا۔ 3جنوری2018ء کا دن جمعیت اہل حدیث کی تاریخ میں رنج والم سے بھرپور ایک ناقابل فراموش دن شمار ہوگا،آج سے جماعت، المعہد السلفی کی اور مجلہ دعوت اہل حدیث کے قارئین …

Read More »

اربعینِ نووی حدیث نمبر27،قسط نمبر 59

عن النواس بن سمعان رضي الله عنهما، عن النبي ﷺ  قال: ((البر حسن الخلق، والإثم ما حاك في نفسك وكرهت أن يطلع عليه الناس)) . أخرجه مسلم- كتاب: البر والصلة والآداب، باب: تفسير البر والإثم، (25539، (14) . ترجمہ:سیدنانواس بن سمعان tسے مروی ہے،نبیﷺ نے فرمایا:نیکی اچھے اخلاق کانام ہے، اور برائی ہر وہ چیز ہے جو تمہارے نفس میں …

Read More »

اربعینِ نووی حدیث نمبر:26 قسط :58

حدیث نمبر:26 قسط :58 عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ رضي الله عنه قَالَ: قَالَ رَسُولُ اللهِ ﷺ: "كُلُّ سُلامَى مِنَ النَّاسِ عَلَيْهِ صَدَقَةٌ كُلَّ يَومٍ تَطْلُعُ فِيْهِ الشَّمْسُ: تَعْدِلُ بَيْنَ اثْنَيْنِ صَدَقَةٌ، وَتُعِيْنُ الرَّجُلَ في دَابَّتِهِ فَتَحْمِلُ لَهُ عَلَيْهَا أَو تَرْفَعُ لَهُ عَلَيْهَا مَتَاعَهُ صَدَقَةٌ، وَالكَلِمَةُ الطَّيِّبَةُ صَدَقَةٌ، وَبِكُلِّ خُطْوَةٍ تَمْشِيْهَا إِلَى الصَّلاةِ صَدَقَةٌ، وَتُمِيْطُ الأَذى عَنِ الطَّرِيْقِ صَدَقَةٌ” رواه البخاري ومسلم. …

Read More »

اربعین نووی حدیث نمبر25قسط57

عَنْ أَبي ذَرٍّ رضي الله عنه أَيضَاً أَنَّ أُنَاسَاً مِنْ أَصحَابِ رَسُولِ اللهِ ﷺ قَالوا للنَّبيِ ﷺ يَارَسُولَ الله: ذَهَبَ أَهلُ الدثورِ بِالأُجورِ، يُصَلُّوْنَ كَمَا نُصَلِّيْ، وَيَصُوْمُوْنَ كَمَا نَصُوْمُ، وَيَتَصَدَّقُوْنَ بفُضُوْلِ أَمْوَالِهِمْ، قَالَ: (أَوَ لَيْسَ قَدْ جَعَلَ اللهُ لَكُمْ مَا تَصَّدَّقُوْنَ؟ إِنَّ بِكُلِّ تَسْبِيْحَةٍ صَدَقَة. وَكُلِّ تَكْبِيْرَةٍ صَدَقَةً وَكُلِّ تَحْمَيْدَةٍ صَدَقَةً وَكُلِّ تَهْلِيْلَةٍ صَدَقَةٌ وَأَمْرٌ بالِمَعْرُوْفِ صَدَقَةٌ وَنَهْيٌ عَنْ مُنْكَرٍ …

Read More »

اربعینِ نووی حدیث نمبر 24 قسط 56

یقول الإمام مسلم رحمہ اللہ تعالیٰ فی باب تحریم الظلم: حدثنا عبداللہ بن عبدالرحمن بن بھرام الدارمی، حدثنا مروان(یعنی ابن محمد الدمشقی) حدثنا سعید بن عبد العزیز عن ربیعۃ ،عن أبی إدریس الخولانیٍ، عن أبی ذر، عن النبی صلی اللہ علیہ وسلم ، فیما روی عن اللہ تبارک وتعالیُٰ: یا عبادی! إنی حرمت الظلم علی نفسی وجعلتہ بینکم محرما، فلا تظالموا،یا …

Read More »

اربعینِ نووی حدیث نمبر:23 قسط:55

(۷) وَالقُرْآنُ حُجَّةٌ لَكَ أَو عَلَيْكَ. اورقرآن آپ کے حق میں یاآپ کے خلاف حجت ہے۔ قرآن پاک اللہ تعالیٰ کاکلام ہے، جسے جبریل uنے اللہ تعالیٰ کی طرف سے لاکر،رسول اللہ ﷺ کے قلبِ اطہر پہ اتارا،جس میں کسی قسم کے تغیروتبدل کا کوئی امکان نہیں؛کیونکہ جبریلuقوی بھی تھے اور امین بھی،جیسا کہ اللہ تعالیٰ نے فرمایا: [اِنَّہٗ لَقَوْلُ …

Read More »

اربعینِ نووی حدیث نمبر:23 قسط:54

(۶) وَالصَّبْرُ ضِيَاءٌ. اور صبر روشنی ہے۔ صبرکالغوی معنی،حبس یعنی روکنااوربرداشت کرنا ہے، شرعی اصطلاح میں صبر کامعنی:(حبس النفس علی طاعۃ اللہ) یعنی: نفس کو اللہ تعالیٰ کی اطاعت پر روکنا اور قائم رکھنا۔ علمائے کرام نے صبر کی تین اقسام بیان فرمائی ہیں: (۱) صبر علی طاعۃ اللہ.یعنی:اللہ تعالیٰ کی اطاعت پر صبر کرنا،اس سے مراد یہ ہے کہ …

Read More »

سوالات وجوابات

پیشاب کی تھیلی کے ساتھ نماز (1) اگر کسی کو پیشاب کے قطرے ہمیشہ گرنے کی بیماری ہو تو ایسا شخص تھیلی لگاکرنماز پڑھ سکتاہے۔ الجواب بعون الوہاب صورت مسئولہ برصحت سؤال ایسے شخص کو ہرنماز کیلئے وضوکرنا ہوگا، وضوکرکے وہ نماز میں شامل ہوجائے اس کے بعد اگرچہ پیشاب کے قطرے تھیلی میں گرتے رہیں تو کوئی حرج نہیںاور …

Read More »